اہم خبریں: شری کرشن جنم بھومی اور شاہی عیدگاہ معاملہ پر آئندہ سماعت 18 اکتوبر کو

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

30 Sep 2021, 10:50 PM

شری کرشن جنم بھومی معاملے کی اگلی سماعت 18 اکتوبر کو

متھرا: شری کرشن جنم بھومی سے متعلق معاملہ میں عدالت سے شاہی مسجد عید گاہ کے اندر ہندو مندر کے نشانات وغیرہ کی حقیقت کی جانچ کے لئے ایک ماہرین کی کمیٹی بنانے کے لئے سول جج سینئر ڈویزن کی عدالت میں عرضی دی گئی۔ عدالت اس معاملے میں 18 اکتوبر کو اگلی سماعت کرے گی۔ وکیل مہندر پرتاپ سنگھ سمیت پانچ فریقین نے ٹھاکر کیشو دیو جی مہاراج کی 13.37 ایکڑ زمین کے ایک حصہ میں بنی شاہی مسجد کو ہٹانے سے متعلق معاملہ میں آج دائر کی گئی عرضی میں کہا ہے کہ شاہی مسجد عیدگاہ میں نہ صرف ہندو مندر کے شنکھ، اوم جیسے نشانات موجود ہیں بلکہ مسجد کا واستو بھی ہندو مندر جیسا ہے۔ ان نشانات کو مٹانے سے روکنے کے لئے سٹی مجسٹریٹ، آثار قدیمہ محکمہ کے سینئر حکام، ایڈیشنل پولیس سپرنٹنڈنٹ سطح کے ایک پولیس افسر اور ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے چیف انجینئر کی ایک اعلی سطحی کمیٹی بنا کر اس سے مسجد میں بنے مذکورہ نشانات کی جانچ کر کے رپورٹ عدالت میں پیش کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔

30 Sep 2021, 7:20 PM

پنجاب کے وزیر اعلیٰ چرنجیت چنّی نے 4 اکتوبر کو کابینہ میٹنگ طلب کی

پنجاب کا وزیر اعلیٰ بننے کے بعد چرنجیت سنگھ چنّی عوامی مفادات میں کئی اعلانات کر چکے ہیں، اور اب بہتر انداز میں حکومت چلانے کی تیاری کر رہے ہیں۔ انھوں نے آئندہ 4 اکتوبر کو سکریٹریٹ میں کابینہ میٹنگ طلب کی ہے جس میں آئندہ کے لائحہ عمل کو طے کیا جائے گا۔

30 Sep 2021, 5:47 PM

جموں و کشمیر کے صحافیوں کو ہراساں کرنے کے الزامات کی تحقیقات کروائے گی پریس کونسل

نئی دہلی: جموں و کشمیر میں صحافیوں کو ہراساں کرنے اور دھمکانے کے الزامات کا از خود نوٹس لیتے ہوئے پریس کونسل آف انڈیا نے اس کی تحقیقات کے لیے تین رکنی فیکٹ فائنڈنگ ٹیم تشکیل دی ہے۔ پریس کونسل آف انڈیا کی ایک پریس ریلیز کے مطابق کونسل کے چیئرمین جسٹس چندرمولی کمار پرساد نے جموں و کشمیر کے صحافیوں کو ہراساں کرنے اور دھمکانے پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔ پریس ریلیز کے مطابق جسٹس پرساد نے معاملے کا از خود نوٹس لیتے ہوئے تین رکنی فیکٹ فائنڈنگ ٹیم تشکیل دی ہے۔ اس گروپ میں روزنامہ بھاسکر کے گروپ ایڈیٹر پرکاش دوبے، نیو انڈین ایکسپریس کے صحافی گُربیر سنگھ اور جن مورچہ کے ایڈیٹر ڈاکٹر سمن گپتا شامل ہیں۔


30 Sep 2021, 3:02 PM

گورکھپور میں پولیس کی پٹائی سے کاروباری کی موت، راہل گاندھی کا متاثرہ کنبہ سے اظہار یکجہتی

گورکھپور میں پولیس کی طرف سے ایک ہوٹل میں کاروباری منیش گپتا کی پٹائی میں موت کا معاملہ لگاتار گرما رہا ہے۔ دریں اثنا، کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے متاثرہ کنبہ سے یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔ راہل گاندھی نے کہا، ’’میناکشی گپتا کا دردناک ویڈیو دیکھ پر بہت دکھ ہوا۔ منیش گپتا کے کنبہ سے میری تعزیت۔ بی جے پی حکومت کی ناانصافی کے خلاف اس جنگ میں میں آپ کے ساتھ ہوں۔ انصاف لے کر رہیں گے، حق ہے، احسان نہیں۔‘‘

30 Sep 2021, 1:17 PM

شاہراہیں اتنے دنوں تک مسدود کیسے رہ سکتی ہیں؟ کسان تحریک پر سپریم کورٹ کا حکومت سے سوال

سپریم کورٹ نے کسان تحریک کے دوران بند کی گئی شاہراہیں کو کھلوانے کے تعلق سے ایک عرضی پر سماعت کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کا حل عدالت، احتجاج یا پھر پارلیمانی مباحثوں کے ذریعے ہو سکتی ہے لیکن اتنے دنوں تک سڑکیں مسدود رہنے کا کیا جواز ہے؟ عدالت نے عظمیٰ نے کہ سڑکوں کے بعد ہونے سے پیدا ہونے والا مسئلہ مستقل نہیں ہو سکتا اور اس کو حل کیا جانا چاہئے۔ سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت کی اس درخواست کو منظور کر لیا جس میں اس معاملہ میں کچھ کسان تنظیموں کو فریق بنائے جانے کی گزارش کی گئی تھی۔ اس معاملہ پر اگلی سماعت آئندہ پیر کے روز کی جائے گی۔


30 Sep 2021, 11:25 AM

میگھالیہ میں بس ندی میں گرنے سے حادثہ، چار افراد ہلاک

میگھالیہ میں دیر رات گئے تورا سے شیلانگ کی طرف جانے والی ایک ایک بس نوگرام کے مقام پر رنگدی ندی میں گر گئی۔ اس حادثہ میں چار مسافروں کی جان چلی گئی جبکہ زخمیوں کو اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ ایسٹ گارو ہلز پولیس نے بتایا کہ موقع پر راحت اور بچاؤ کا کام جاری ہے۔

30 Sep 2021, 9:46 AM

ہندوستان میں کورونا کے 23529 نئے کیسز، 311 اموات

مرکزی وزارت صحت کے مطابق ہندوستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 23529 نئے کیسز رپورٹ ہوئے۔ اس دوران 28718 مریضوں نے شفایابی حاصل کر لی، جبکہ 311 افراد کی جان چلی گئی۔

فی الحال ملک بھر میں کورونا کے 277020 کیسز فعال ہیں، جبکہ اب تک مجموعی طور پر رپورٹ ہونے والے 33739980 کیسز میں سے 33014898 مریض شفایاب ہو چکے ہیں اور ملک بھر کے 4 لاکھ 48 ہزار کے قریب مریض دم توڑ چکے ہیں۔ دریں اثنا، 883470578 افراد کورونا ویکسین کی خوراک حاصل کر چکے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔