یوپی میں جنگل راج: غنڈوں کی سرِ عام دھمکیاں، افسران کی حفاظت کے لئے گہار!

اب تو غنڈے سرکاری لوگوں کو بھی گھر میں گھس کر دھمکی دینے لگے ہیں۔ بدمعاشوں کے حوصلے اتنے بلند ہیں کہ انہوں نے متھرا کے ایس ڈی ایم کی رہائش گاہ پر پہنچ کر انہیں دیکھ لینے کی دھمکی دے ڈالی۔

یوپی میں جنگل راج: غنڈوں کی سرِ عام دھمکیاں، افسران کی حفاظت کے لئے گہار!
یوپی میں جنگل راج: غنڈوں کی سرِ عام دھمکیاں، افسران کی حفاظت کے لئے گہار!
user

قومی آوازبیورو

اتر پردیش میں جرائم کے عروج کو دیکھ کر یوں محسوس ہوتا ہے کہ مجرموں میں پولیس کا کوئی خوف نہیں رہ گیا ہے۔ ہر روز اس طرح کی واردات انجام دی جا رہیں جنہیں دیکھ کر لوگ اب یہ کہنے پر مجبور ہو رہے ہیں کہ یوگی راج میں جنگل راج چل رہا ہے۔ جرائم پیشہ افراد نے یکے بعد دیگرے کئی ایسی واردات انجام دی ہیں جن سے ظاہر ہوتا ہے کہ ان کے حوصلے کتنے بلند ہیں۔

پہلے کانپور میں 8 پولیس اہلکار کو گولی مار کے قتل کر دیا گیا۔ پھر کانوپور میں ہی بدمعاشوں نے ایک لیب ٹیکنیشین کو اغوا کیا اور پولیس کی ناک کے نیچے سے 30 لاکھ لے کر فرار ہو گئے۔ بعد میں خبر آئی کہ لیب ٹیکنیشین کو قتل کر دیا گیا ہے۔ اس کے بعد غازی آباد میں ایک صحافی کو غنڈے سر عام موت کے گھاٹ اتار دیتے ہیں۔ صحافی کا قصور صرف اتنا تھا کہ انہوں نے غنڈوں کو اپنی بھانجی کے ساتھ چھیڑ خانی کرنے سے روکا تھا اور ان کی شکایت پولیس میں کر دی تھی۔

اب تو غنڈے سرکاری لوگوں کو بھی گھر میں گھس کر دھمکی دینے لگے ہیں۔ بدمعاشوں کے حوصلے اتنے بلند ہیں کہ انہوں نے متھرا کے ایس ڈی ایم کی رہائش گاہ پر پہنچ کر انہیں دیکھ لینے کی دھمکی دے ڈالی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق ایس ڈی ایم راجیو اپادھیائے نے ڈی ایم اور ایس پی کو خط لکھ کر واقعہ کی اطلاع دی ہے اور حفاظت کی گہار لگائی ہے۔ اپادھیائے کے مطابق رات کے تقریباً 9.20 پر ان کی سرکاری رہائش گاہ بی-13 آفیسرز کالونی کے باہر ایک ایس یو وی میں چار رائفل بردار اور ایک پستول سے لیس شخص نے ان کے گھر پر تعینات گارڈ کو دھمکی دی۔

انہوں نے بتایا کہ بدمعاشوں نے کہا کہ راجیو اپادھیائے کو خبردار کر دینا کہ اس کا وقت پورا ہو چکا ہے۔ جلد ہی اس کو نمٹا دیا جائے گا۔ اسے کہہ دو کہ ضلع مجسٹریٹ کے کہنے پر دکانیں گرانے، گرام سبھا اور سرکاری املاک سے قبضہ ہٹوانے کا کام فوری چھوڑ دے نہیں تو اس کی خیر نہیں۔ گارڈ ویپن اور بھوری سنگھ کو اس طرح کی دھمکیاں دینے کے بعد یہ بدمعاش اپنی کار سے فرار ہو گئے۔

یو پی کے ضلع گونڈہ سے بھی اغوا کرنے کی ایک بری واردات منظر عام پر آئی ہے۔ یہاں جمعہ کے روز ماسک اور سینیٹائزر تقسیم کرنے کے بہانے کچھ غنڈوں نے ایک کاروباری کے 7 سالہ بچے کو اغوا کر لیا اور کنبہ سے 4 کروڑ کے تاوان کا مطالبہ کیا۔ ایک فون کال کی آڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے جس میں ایک خاتون چار کروڑ روپے کا تاوان طلب کر رہی ہے۔ غنیمت یہ رہی کہ کاروباری کے بیٹے کو پولیس نے بحفاظت بازیاب کرا لیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔