ووٹوں کا صحیح استعمال کریں ورنہ ہمارا منتخب نمائندہ اسی طرح دوسری جماعتوں میں شامل ہوتا رہے گا: اویسی

اسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ موجود حالات اس بات کے متقاضی ہیں کہ ہم اپنے ووٹ کا صحیح استعمال کرتے ہوئے اپنی لیڈر شپ کا انتخاب کریں

اسد الدین اویسی / ویڈیو گریب
اسد الدین اویسی / ویڈیو گریب
user

یو این آئی

میرٹھ: آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین(اے آئی ایم آئی ایم) صدر و حیدرآباد سے رکن پارلیمان اسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ موجود حالات اس بات کے متقاضی ہیں کہ ہم اپنے ووٹ کا صحیح استعمال کرتے ہوئے اپنی لیڈر شپ کا انتخاب کریں، بصورت دیگر ہمارے ووٹوں سے منتخب نمائندہ دوسری پارٹیوں میں اسی طرح شامل ہوتا رہے گا۔

اویسی ضلع میرٹھ میں ہاپوڑ روڈ واقع سی این جی پٹرول پمپ کے سامنے منعقد ریلی میں خطاب کررہے تھے۔انہوں نے کہا کہ ہم یہاں آپ لوگوں سے اس بات کی اپیل کرنے آئے ہیں کہ ووٹوں کا صحیح استعمال کرتے ہوئے اپنی لیڈر شپ کا انتخاب کریں۔انہوں نے ملیانہ اور ہاشم پورہ واقعہ کا خصوصی ذکر کرتے ہوئے کہا کہ جومظالم یہاں کے مسلمانوں پر ڈھائے گئے ہیں ان سے اگر سبق نہیں لیا گیا تو پھر کافی دیر ہوچکی ہوگی۔


بیرسٹر اویسی نے مرکزی حکومت کے ذریعہ لڑکیوں کی شادی کی عمر18 سے بڑھا کر 21سال کئے جانے کے فیصلے کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایک لڑکی اگر 18سال کی عمر میں یہ طے کرسکتی ہے کہ کسے ووٹ دینا ہے تو وہ اپنی شادی کے بارے میں یہ فیصلہ کیسے نہیں کرسکتی کی کس سے اور کب شادی کرنی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کی اس کے پیچھے کیا منشی ہے یہ شاید ابھی کسی کو معلوم نہیں ہے لیکن یہ یقینی ہے کہ وزیر اعظم مودی شادی کے ہی خلاف ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ فی الحال ملک میں ایسے کیسے مسائل ہیں جن پر حکومت کو غورو فکر کرنی چاہئے۔


جائے ریلی پر ضلع انتظامیہ نے جگہ جگہ سی سی ٹی وی کیمرے لگائے تھے۔قابل ذکر ہے کہ اس سے پہلے میرتھ کے نوچندی میدان میں اویسی کی عوامی ریلی ہونی تھی لیکن انتظامیہ کی اجازت نہ ملنے کی وجہ سے اسے ملتوی کردیا گیا تھا۔اس وقت پارٹی کارکنوں نے اس کی سخت مخالفت کرتے ہوئے ہنگامہ کیا تھا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔