کورونا کے معاملے بہت تیزی سے بڑھ رہے ہیں لیکن فی الحال لاک ڈاؤن کی ضرورت نہیں: کیجریوال

وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کہا کہ دہلی میں کورونا وائرس کی یہ چوتھی لہر ہے، معاملے اگرچہ بہت تیزی سے بڑھ رہے ہیں لیکن گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے، حکومت ہر ضروری اقدام کرے گی

وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال / آئی اے این ایس
وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال نے کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسزکے پیش نظر جمعہ کے روز اپنی رہائش گاہ پر ایک اعلی سطحی میٹنگ کے بعد کہا کہ دہلی میں کورونا کی صورتحال قابو میں ہے اور حکومت کا لاک ڈاؤن نافذ کرنے کا کوئی پروگرام نہیں ہے۔

وزیر صحت ستیندر جین اور محکمہ صحت کے افسران کے ساتھ میٹنگ کے بعد کجریوال نے پریس کانفرنس میں کہا کہ دہلی میں کورونا قابو میں ہے اور فی الحال لاک ڈاؤن لگانے کا حکومت کا کوئی خیال نہیں ہے۔ ہم حالات پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور اگر مستقبل میں ضرورت پیش آتی ہے تو عوام سے بات کرکے فیصلہ لیا جائے گا۔ دہلی کو کورونا وائرس کی چوتھی لہر کا سامنا ہے ، لیکن یہ پچھلی لہر سے کم شدید ہے۔ لہذا ابھی سے گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کو 45 سال کی عمر کی قید کو ختم کردینا چاہئے اور ہر عمر کے لوگوں کو جنگی سطح پر ویکسین کی اجازت دی جائے ، تاکہ کوروناسے جلدازجلدسے چھٹکارامل سکے۔ انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے ماسک پہنیں ، سوشل ڈسٹنسنگ پر عمل کریں اور اپنے ہاتھوں کو کثرت سے دھوتے رہیں۔

انہوں نے بتایا کہ 45 سال زیادہ عمر والوں کو ٹیکہ لگنا شروع ہو گیا اور کل 71000 افراد کو ٹیکہ لگایا گیا۔ ۔انہوں نے ٹیکہ کو پوری طرح محفوظ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اگر مرکزی حکومت ہمیں بڑے پیمانے پر ٹیکے لگانے کی اجازت دیتی ہے تو ہم اسکولوں میں سنٹر بنا کر جنگی پیمانے پر ٹیکہ کاری مہم شروع کر سکتے ہیں۔ اگر ہم اسپتال کے علاوہ کسی دوسری جگہ پر ٹیکہ لگانے کی اجازت نہیں دیتے ہیں تو ہم زیادہ سے زہادہ لوگوں کو ٹیکہ نہیں لگا پائیں گے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔