مہاراشٹرمیں لاک ڈاؤن جیسی پابندیاں، اپنی ذاتی گاڑی میں بھی سفر پر پابندی

کورونا وبا سے سب سے زیادہ متاثر مہاراشٹر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 67 ہزار سے زیادہ نئے معاملے ریکارڈ کئے گئے ہیں۔

فائل تصویر آئی اے این ایس 
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

کوروناوائرس جس شدت کے ساتھ پھیل رہا ہے اس کے پیش نظر مہاراشٹر حکومت نے ریاست میں سختی بڑھا دی ہے۔نئی رہنما ہدایات کے مطابق ضروری اور ایمرجنسی سروسز کو چھوڑ کر دیگر کسی بھی کام کےلئے باہر جانےپر اور سروسز پر پابندی لگا دی ہے۔

نئی رہنما ہدایات کے مطابق ضروری خدمات ، طبی وجہ یا ٹیکہ لگوانے کے علاوہ کسی بھی دیگر کام کے لئے پبلک یا پرائیویٹ ٹرانسپورٹ کا استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ یعنی اب مہاراشٹر میں کوئی شخص اپنی ذاتی گاڑی سے بھی سڑک پر نہیں نکل سکتا ۔ اسپتال جانے کےلئے ، ٹیکہ لگوانے کےلئےیا کسی ضروری سروس کے لئے ہی کوئی شخص اپنی ذاتی گاڑی کا استعمال کر سکتا ہے۔


واضح رہےشادی کے تعلق سے بھی حکومت نے کہہ دیا ہے کہ اس کےلئےکسی ہال کےاستعمال کی اجازت نہیں ہوگی اور اس میں ۲۵افراد سےزیادہ شرکت نہیں کر سکتے ۔ واضح رہےشادی کی تقریب کےلئے صرف دو گھنٹے کی اجازت ہی ملےگی۔ نئی رہنما ہدایات کےمطابق ان ضابطوں کی خلاف ورزی کی صورت میں پچاس ہزار کا جرمانہ لگےگا۔

ایک دن میں کورونا کے 67 ہزار نئے معامل


ادھر کورونا وبا سے سب سے زیادہ متاثر مہاراشٹر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 67 ہزار سے زیادہ نئے معاملے ریکارڈ کئے گئے اور 568 مزید مریضوں کی موت ہوگئی ، جب کہ فعال معاملوں کی تعداد اب تقریبا سات لاکھ ہے۔

ریاست میں نئے معاملوں کے مقابلے میں صحت مند مریضوں کی تعداد میں کمی کی وجہ سے فعال معاملات میں ایک بہت بڑا اضافہ درج کیا گیا ہے۔ اس عرصے کے دوران فعال معاملات میں 11،891 کے مزید اضافے کی وجہ سے بدھ کو ان کی تعداد 6،95،747 ہوگئی ، جو پورے ملک میں سب سے زیادہ ہے۔


اس عرصے کے دوران ریاست میں سب سے زیادہ انفیکشن (67،468 کے نئے معاملات) ہونے کی وجہ سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 40 لاکھ سے زیادہ 40،27،827 ہوگئی ہے۔ اس سے قبل منگل کو 62،097 نئے معاملے سامنے آئے تھے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق اس عرصے کے دوران مزید 54،985 مریضوں کے صحتیاب ہونے کے ساتھ اس انفیکشن سے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 32،68،449 ہوگئی ہے اور 568 مزید مریضوں کی ہلاکت کے ساتھ اموات کی تعداد مجموعی طور سے بڑھ کر 61،911 ہوگئی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔