عظیم اتحاد سیاست نہیں، عوام کے جذبات ہیں: راہل گاندھی

راہل گاندھی نے کہا کہ مودی حکومت ملک کے امیر لوگوں کے لئے کام کر رہی ہے، اور امیروں کا لاکھوں کروڑ روپے کا قرض معاف کر دیا، لیکن غریبوں کی کوئی سنوائی نہیں ہو رہی ہے۔

اپوزیشن اتحاد کی تنقید کرنے والی بی جے پی کو کانگریس صدر راہل گاندھی نے سخت پیغام دیا ہے، ممبئی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کانگریس صدر نے کہا کہ عظیم اتحاد صرف سیاست نہیں بلکہ یہ عوام کے جذبات ہیں ، انہوں نے کہا، ’’پورا اپوزیشن پی ایم مودی، بی جے پی اور آر ایس ایس کے خلاف کھڑا ہو رہا ہے۔ یہ جذبات صرف سیاسی لوگوں کے نہیں ہیں بلکہ یہ جذبات عوام میں بھی موجود ہیں ، یہ سوال عوام کے اندر بھی ہے کہ جس طرح سے وزیر اعظم اور ان کی پارٹی بی جے پی ملک کے آئینی اداروں پر حملہ کر رہے ہیں، اس کو روکنے کی ضرورت ہے۔ بی جے پی کے خلاف اٹھ رہی آوازوں کو کانگریس پارٹی دیگر پارٹیوں کو جوڑنے کا کام کر رہی ہے اور دوسری پارٹیاں بھی اس میں لگی ہوئی ہیں‘‘۔

راہل گاندھی نے مودی حکومت پر شدید حملہ بولتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت ملک کے امیر لوگوں کے لئے کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا، ’’امیروں کا لاکھوں کروڑ روپے کا قرض مودی حکومت نے معاف کردیا ہے، لیکن ملک میں غریبوں کی کوئی سنوائی نہیں ہو رہی ہے‘‘۔

ملک میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کو لے کر کانگریس صدر نے مودی حکومت پر نشانہ لگایا۔ انہوں نے کہا، ’’منموہن سنگھ جی کے وقت میں پٹرول کی قیمت بین الاقوامی مارکیٹ میں 140 ڈالر فی بیرل ہوا کرتی تھیں، آج شاید 70 ڈالر فی بیرل ہے، اس کا مطلب یہ ہے کہ بین الاقوامی مارکیٹ میں پٹرول کی قیمتیں کم ہوئیم ہیں۔ بین الاقوامی مارکیٹ میں پٹرول کی قیمت کم ہونے کے باوجود عوام کو راحت نہیں مل رہی ہے، ملک میں ہر روز پٹرول-ڈیزل کے دام بڑھ رہے ہیں۔ ’’راہل گاندھی نے مرکزی حکومت سے سوال کیا کہ حکومت جو پیسہ پٹرول-ڈیزل سے کما رہی ہے وہ کہاں جا رہا ہے، کانگریس صدر نے کہا کہ جو پیسہ حکومت پٹرول-ڈیزل سے کما رہی ہے، وہ ملک کے 15-20 امیروں کی جیب میں جا رہا ہے۔

راہل گاندھی نے کہا کہ ہم نے مرکزی حکومت سے یہ مطالبہ کیا ہے کہ پیٹرول-ڈیزل کو جی ایس ٹی کے دائرے میں لایا جائے، لیکن وزیر اعظم جی کو اس میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔

راہل گاندھی نے کہا، ’’مودی حکومت نے چھوٹے تاجروں پر حملہ کر دیا، نوٹ بندی اور جی ایس ٹی لاگو کیا، اس سے پورا ملک ناخوش ہے، جو کمزور ہیں، جو چھوٹے دکاندار ہیں اور چھوٹے تاجر ہیں وہ سب دکھی ہیں، ان کے لئے کانگریس پارٹی لڑ رہی ہے‘‘۔

سب سے زیادہ مقبول