سی بی آئی نے مودی کی اجازت سے مالیا کو بھگایا: راہل گاندھی

وزیراعظم نریندر مودی اور کانگریس صدر راہل گاندھی

راہل گاندھی نے کہا، سی بی آئی نے وجے مالیا کے گرفتاری نوٹس کو اطلاعاتی نوٹس میں تبدیل کر دیا اور وہ بھاگ گیا، یہ بات ناقابل یقین ہے کہ سی بی آئی نے وزیر اعظم کی اجازت کے بغیر یہ قدم اٹھایا۔

نئی دہلی: کانگریس صدر راہل گاندھی نے شراب کاروباری وجے مالیا کے خلاف سی بی آئی کی گرفتاری نوٹس کو اطلاعاتی نوٹس میں تبدیل کرنے کے ضمن میں ویزاعظم نریندر مودی پر براہ راست حملہ کرتے ہوئے کہا کہ جانچ ایجنسی وزیراعظم کے حکم کے بغیر نوٹس نہیں بدل سکتی۔

گاندھی نے جمعہ کو اپنے ٹوئٹ میں لکھا، ’’وجے مالیا کا بھاگنا اسی وقت ممکن ہوپایا جب سی بی آئی نے اس کی گرفتاری نوٹس کو اطلاعاتی نوٹس میں بدلا۔ سی بی آئی وزیر اعظم کو رپورٹ پیش کرتی ہے۔ یہ ناقابل یقین ہے کہ سی بی آئی نے اس ہائی پروفائل معاملے میں وزیر اعظم کی اجازت کے بغیر گرفتاری نوٹس کو تبدیل کردیا۔‘‘

غور طلب ہے کہ گاندھی نے کل پریس کانفرنس میں الزام لگایا تھا کہ مالیا کے خلاف نوٹس کو بدلنے کے پیچھے وزیر اعظم کابراہ راست مداخلت تھی، اس لئے نوٹس کو بدلا گیا اور بینکوں کے نو ہزار کروڑ روپئے لیکر مالیا بیرون ملک فرار ہوگیا۔

یہ بھی پڑھیں: جیٹلی نے کس کے اشارہ پر بھگوڑے کی مدد کی: راہل

دہلی کانگریس کے صدر اجے ماکن نے کانگریس دفتر میں منعقد ایک خصوصی پریس کانفرنس میں کہا کہ مالیا کے خلاف جاری نوٹس کو وزیر اعظم کے اشارے پر ہی بدلا گیا اور اس وجہ سے وہ بیرون ملک بھاگنے میں کامیاب رہا ۔انہوں نے کہا کہ مالیا کو بھاگانے میں حکومت کا ہاتھ ہے۔

سب سے زیادہ مقبول