بھوپال میں بھی علی گڑھ جیسی درندگی، بچی کا آبروریزی کے بعد قتل

پولس ذرائع کے مطابق کچھ لوگوں کو حراست میں لے کر پوچھ گرچھ کی جا رہی ہے اور ایک ملزم کی شناخت کر لی گئی ہے۔ علاوہ ازیں کچھ ثبوت بھی پولس کے ہاتھ لگے ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

قومی آوازبیورو

بھوپال: مدھیہ پردیش کے دارالحکومت بھوپال کے کملا نگر تھانہ علاقے میں علی گڑھ جیسی درندگی منظر عام پر آئی ہے، جہاں ایک نو سالہ بچی کا عصمت دری کے بعد قتل کر دیا گیا۔ پولس نے ملزم کی شناخت کرنے کا دعوی کیا ہے۔

پولس انسپکٹرجنرل یوگیش دیشمکھ نے بتایا کہ کملا نگر علاقے کی منڈوا بستی میں رہنے والے ایک خاندان کی نو سالہ بچی ہفتہ کے روز اپنے گھر سے سامان لینے کے لئے باہر گئی تھی، جس کے بعد وہ واپس نہیں لوٹی۔ ارد گرد کے علاقوں میں اہل خانہ نے بچی کو تلاش کیا لیکن کچھ خبر نہیں لگی۔ اتوار کی صبح اس کی لاش علاقہ کے ہی ایک نالہ سے برآمد ہوئی۔ بچی کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے حمیدیہ اسپتال لے جایا گیا جہاں اس کے اہل خانہ نے کافی ہنگامہ کیا۔ ادھر ماحول میں کشیدگی کے پیش نظر علاقہ میں بھری پولس فورس کو تعینات کر دیا گیا ہے۔

دیشمکھ نے بتایا کہ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق بچی کی عصمت دری کے بعد گلا دبا کر قتل کیا گیا ہے۔ دیشمکھ نے بتایا کہ ملزم کی شناخت کرلی گئی ہے اور پولس ٹیم اس کی تلاش کر رہی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ کل رات بچی کے لاپتہ ہونے کے بعد اس کے گھر والے تھانے پہنچے اور اس کے لاپتہ ہونے کی اطلاع پولس کو دی، تبھی سے پولس بچی کی تلاش کرنے میں لگ گئی تھی۔

پولس ذرائع کے مطابق کچھ لوگوں کو حراست میں لے کر پوچھ گرچھ کی جا رہی ہے اور ایک ملزم کی شناخت کر لی گئی ہے۔ علاوہ ازیں کچھ ثبوت بھی پولس کے ہاتھ لگے ہیں۔

(یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)

Published: 9 Jun 2019, 6:10 PM