ای ڈی نے عمر عبداللہ کو پوچھ گچھ کے لئے کیا طلب، نیشنل کانفرنس کا مرکز پر نشانہ

جموں کشمیر نیشنل کانفرنس نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی کے نائب صدر عمر عبداللہ کو ای ڈی نے جمعرات کو اس بنیاد پر طلب کیا ہے کہ تحقیقات کے سلسلہ میں ان کی حاضری ضروری ہے۔

عمر عبداللہ / آئی اے این ایس
عمر عبداللہ / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

سری نگر: نیشنل کانفرنس نے جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ کو جموں کشمیر بینک منی لانڈرنگ معاملہ میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کی جانب سے پوچھ گچھ کے لئے طلب کئے جانے کے بعد مرکزی حکومت پر حملہ بولا ہے۔ جموں کشمیر نیشنل کانفرنس (جے کے این سی) نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ پارٹی کے نائب صدر عمر عبداللہ کو ای ڈی نے جمعرات کو اس بنیاد پر طلب کیا ہے کہ تحقیقات کے سلسلہ میں ان کی حاضری ضروری ہے۔

پارٹی کے بیان میں کہا گیا، ’’رمضان کا پاک مہینے ہونے اور دہلی میں ان کی ذاتی رہائش گاہ نہیں ہونے کے باوجود عبداللہ نے معطلی یا مقام میں تبدیلی کا مطالبہ نہیں کیا اور نوٹس کے مطابق پیش ہوئے۔ مرکزی حکومت نے تفتیشی ایجنسیوں کا غلط استعمال کرنے کی عادت بنا لی ہے اور یہ اسی سمت میں ایک اور قدم ہے۔‘‘


بیان میں مزید کہا گیا، ’’بی جے پی کے خلاف احتجاج کرنے والی کسی بھی سیاسی جماعت کو بخشا نہیں گیا ہے۔ خواہ وہ ای ڈی ہو، سی بی آئی ہو، این آئی اے ہو یا این سی بی ہو، سبھی کا سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کیا گیا ہے۔‘‘ بیان میں کہا گیا کہ ایک وقت تھا جب انتخابی کمیشن کی جانب سے انتخابات کا اعلان کیا جاتا تھا لیکن اب تو یوں محسوس ہوتا ہے گویا انتخابات کا اعلان بھی ای ڈی کی جانب سے کیا جاتا ہے۔

این سی نے کہا، ’’حال ہی کے سالوں میں ہم نے دیکھا ہے کہ جہاں بھی ریاستی انتخابات ہونے ہیں ای ڈی جیسی ایجنسی پیش قدمی کرتی ہیں اور ان جماعتوں کو نشابہ بناتی ہیں جو بی جے پی کو چیلنج کرتی ہیں۔ اگرچہ یہ سیاسی عمل ہے تاہم عمر عبداللہ تفتیشی ایجنسی کے ساتھ تعاون کریں گے، کیونکہ ان کی جانب سے کوئی غلط کام نہیں کیا گیا ہے اور وہ تفتیش کے تحت کسی بھی معاملہ میں ملزم نہیں ہیں۔‘‘

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔