مانسون اجلاس: ٹی ایم سی کی موسم نور نے راجیہ سبھا کی رکنیت کا حلف لیا

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

قومی آوازبیورو

16 Sep 2020, 1:37 PM

ٹی ایم سی کی موسم نور نے راجیہ سبھا کی رکنیت کا حلف لیا

نئی دہلی: ترنمول کانگریس کی موسم نور نے بدھ کے روز راجیہ سبھا کی رکنیت کا حلف لیا۔ نور نے جو کہ سفید شلوار سوٹ زیب تن کئے ہوئے تھیں، انگریزی میں حلف لیا۔ حلف لیتے وقت ان کے کندھے پر ایک بیگ لٹکا ہوا تھا۔

جب وہ حلف اٹھانے کے بعد اپنی پارٹی کے رہنماؤں سے ملنے کے لئے آگے بڑھیں تو چیئرمین ایم ونکیا نائیڈو نے کہا کہ وہ بعد میں رہنماؤں سے مل لیں، اس کے بعد وہ لوٹ کر اپنی نشست پر بیٹھ گئیں۔

16 Sep 2020, 1:01 PM

راجیہ سبھا میں کورونا پر بحث کے لئے انتہائی کم وقت دئے جانے پر آنند شرما برہم

کورونا وائرس پر راجیہ سبھا میں ہونے والی بحث دوران آنند شرما کانگریس پارٹی کا موقف پیش کر ہی رہے تھے کہ نائب چیئرمین نے انہیں ٹوک دیا اور کہا کہ بحث کے لئے صرف 2.30 گھنٹے کا وقت دیا گیا ہے۔ اس پر آنند شرما نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے پوچھا کہ اتنے کم وقت میں بھلا بحث کس طرح ہو پائے گی۔ آنند شرما نے کہا کہ اتنا کم وقت دے کر بحث کو مذاق نہ بنائیں۔

ٹی ایم سی رکن پارلیمنٹ نے اصولوں کا حوالہ دیا تو نائب چیئرمین نے کہا کہ 2.30 گھنٹے کا وقت دیا گیا ہے اور اسی میں بحث پوری ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ارکان آج اپنا موقف رکھیں گے اور کل وزیر صحت اس پر جواب دیں گے۔ اس دوران حزب اقتدار اور حزب اختلاف کے ارکان میں تو تو میں میں بھی نظر آئی۔

16 Sep 2020, 11:42 AM

راجیہ سبھا میں کورونا پر بحث، اپوزیشن کے حکومت پر حملے

ملک میں کورونا کی صورت حال اور حکومت کی طرف سے اٹھائے گئے اقدامات پر راجیہ سبھا میں بحث ہو رہی ہے۔ کانگریس کے رکن پارلیمنٹ آنند شرما نے اپنے بیان میں کہا کہ کورونا کے دور میں حکومت نے لاک ڈاؤن نافذ کیا تو اس کے کیا فائدے ہوئے، وہ بھی حکومت کو بتانا چاہئے۔

آنند شرما نے کہا کہ کل وزیر صحت نے کہا کہ لاک ڈاؤن کے فیصلے نے تقریباً 14 سے 29 لاکھ کورونا کے معاملوں اور 73 سے 78 ہزار اموات کو روکا، اوکان کو مطلع کیا جانا چاہئے کہ اس بیان کی وہ سائنسی بنیاد کیا ہے جس سے یہ نتیجہ نکالا گیا! آنند شرما نے کہا کہ اچانک 4 گھنٹوں کے نوٹس پر لاک ڈاؤن نافذ کیا گیا، اس سے لوگوں کو تکلیف کا سامنا کرنا پڑا اور ہندوستان کی دنیا میں جو تصویر پیش ہوئی اس سے ہم انکار نہیں کر سکتے۔

16 Sep 2020, 10:52 AM

چین کی طرف سے جاسوسی پر کانگریس لیڈران نے پیش کئے التوا کے نوٹس

چین کی طرف سے ہندوستان کے متعدد اہم عہدیداروں کی جاسوسی کرائے جانے کے معاملہ میں کانگریس کے رکن پارلیمنٹ کے سی وینو گوپال نے راجیہ سبھا میں جبکہ ادھیر رنجن چودھری نے لوک سبھا میں نوٹس پیش کئے ہیں۔ کانگریس کا مطالبہ ہے کہ اس حساس معاملہ پر پارلیمنٹ میں بحث کرائی جانی چاہئے۔

خیال رہے کہ ایک روز قبل ہی یہ سنسنی خیز انکشاف کیا گیا ہے کہ چین کی طرف سے پی ایم او عہدیداران، پولیس سربراہوں اور متعدد سیاستدانوں سمیت 370 لوگوں کی جاسوسی کرائی گئی ہے۔

کانگریس کے رکن پارلیمنٹ کے سی وینو گوپال نے راجیہ سبھا میں نوٹس پیش کرتے ہوئے کہا، ’’ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق چین جھین میں واقع ٹیک کمپنی جس کے چینی حکومت کے ساتھ روابط ہیں، اس نے تقریباً 10 ہزار ہندوستانیوں کو اپنے بیرونی اہداف کی فہرست میں شامل کیا ہے۔ ہم جاننا چاہتے ہیں کہ کیا حکومت کو اس معاملہ کی خبر تھی، اگر ہاں تو حکومت نے کا اقدام اٹھائے؟‘‘

16 Sep 2020, 9:57 AM

پارلیمنٹ کے باہر کسانوں کا احتجاج، راجیہ سبھا کی کارروائی جاری

پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کا آج تیسرا دن ہے۔ راجیہ سبھا کی کارروائی شروع ہو گئی ہے اور راج ناتھ سنگھ آج لداخ سرحد پر ہندوسان-چین تنازعہ پر بیان دیں گے۔ راج ناتھ سنگھ نے گزشتہ روز لوک سبھا میں بیان دیا تھا۔ ادھر کسانوں سے وابستہ تین آرڈینسز کے خلاد کسان آواز اٹھا رہے ہیں۔ بھارتیہ کسان یونین نے اعلان کیا ہے کہ کسان مخالف آرڈینسز کے خلاف پارلیمنٹ کے باہر دھرنا دیا جائے گا۔ ادھر حکومت کی اتحادی جماعت اکالی دل بھی آرڈیننس کے خلاف ووٹنگ کر سکتی ہے۔

راجیہ سبھا کی کارروائی جاری ہے اور فی الحال تعلیم آیروید اور تحقیقی ادارہ آرڈیننس 2020 پر بحث ہو رہی ہے۔

16 Sep 2020, 10:06 AM

نذیر احمد لاوے اٹھائیں گے جموں و کشمیر کی سڑکوں کا مدعا

بی ایس پی کے رکن پارلیمنٹ وی سنگھ نے بڑھتی بے روزگاری کا مسئلہ اٹھانے کے لئے نوٹس دیا ہے۔ جبکہ آر جے ڈی کے رکن پارلیمنٹ منوج جھا مہاجر مزدوروں کا مسئلہ اٹھائیں گے۔

    next