حکومت ریزرویشن کو نویں شیڈیول میں شامل کرے: مایاوتی

مایاوتی نے کہا کہ مرکز کے غلط رویہ کی وجہ سے ہی عدالت نے سرکاری نوکری اور عہدے میں ترقی معاملے میں ریزرویشن کے انتظام کو جس طرح سے غیر فعال اور غیر مؤثر بنا دیا ہے اس سے پورا سماج مشتعل اور ناراض ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی: بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کی صدر مایاوتی نے درج فہرست ذات و قبائل اور دیگر پسماندہ طبقوں (ایس سی، ایس ٹی، اوبی سی) کے لئے ریزرویشن کی سہولت کو آئین کی نویں شیڈیول میں شامل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے اتوار کو کہا کہ اس سے ان طبقوں کو تحفظ مل سکے گا۔

مایاوتی نے ایک سلسلے وار ٹوئت میں کہا کہ کانگریس کے بعد اب بھارتیہ جنتاپارٹی اور ان کی مرکزی حکومت کے مسلسل نظرانداز کرنے کے رویہ کی وجہ سے صدیوں سے پسماندہ ایس سی، ایس ٹی اور او بی سی طبقے کے مظلوم-متاثرین کو ریزرویشن کے ذریعہ سے ملک کے مرکزی دھارے میں لانے کی مثبت آئینی کوشش ناکام ہو رہی ہے۔ یہ بےحد حساس اور بدقسمتی کی بات ہے۔

انہوں نے کہا کہ ’’ایسے میں مرکزی حکومت سے پھر مطالبہ ہے کہ وہ ریزرویشن کے مثبت انتظام کو آئین کے نویں شیڈیول میں لاکر اس کو تحفظ تب تک مہیا کریں جب تک کے محروم اور مظلوم کروڑوں لوگ ملک کے مرکزی دھارے میں شامل نہیں ہو جاتے، جو ریزرویشن کی صحیح آئینی منشا ہے۔‘‘

بی ایس پی لیڈر نے الزام لگایا کہ مرکز کے ایسے غلط رویہ کی وجہ سے ہی عدالت نے سرکاری نوکری اور عہدے میں ترقی میں ریزرویشن کے انتظام کو جس طرح سے غیر فعال اور غیر مؤثر بنا دیا ہے اس سے پورا سماج مشتعل اور ناراض ہے۔ ملک میں غریبوں، نوجوانوں، خواتین اور دیگر محروموں کے حقوق پر مسلسل شدید حملے ہو رہے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next