یوپی انتخابات سے عین قبل لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے مندروں میں کی پوجا، ایس پی کو اعتراض

اپنے آبائی شہر آئے جموں و کشمیر کے لفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے 25 تا 27 فروری کے درمیان مختلف مندروں میں پوجا پاٹ کی ہے۔

منوج سنہا، تصویر یو این آئی
منوج سنہا، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

غازی پوری: جموں۔ کشمیر کے لفٹیننٹ گورنر و سابق مرکزی وزیر منوج سنہا کے ذریعہ مختلف مندروں میں کئے جا رہے درشن ۔پوجن پر سماج وادی پارٹی (ایس پی) نے الیکشن کمیشن سے اپنے اعتراض کا اظہار کرتے ہوئے مخصوصی پارٹی کو فائدہ پہنچانے کے شبہ کا اظہار کیا ہے۔

غازی پور میں ایس پی کے ضلع صدر رام دھاری یادو نے چیف الیکشن کمشنر کو ایک خط لکھ کر شکایت درج کرائی ہے جس میں انہوں نے جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کے ذریعہ ضلع کے مختلف مندروں میں کئے جا رہے درشن، پوجن اور سابقہ کچھ دنوں سے ضلع میں مقیم مرکزی وزیر سنجیو بالیان کے قیام پر اعتراض کا اظہار کرتے ہوئے مخصوص پارٹی کو نقصان پہنچانے کی شکایت کی ہے۔


قابل ذکر ہے کہ مرکزی وزیر سنجیو بالیان گزشتہ ایک ہفتے سے غازی پور میں مقیم ہیں جبکہ اپنے آبائی شہر آئے جموں و کشمیر کے لفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے 25 تا 27 فروری کے درمیان مختلف مندروں میں پوجا پاٹ کی ہے۔ منوج سنہا غازی پور سے تین بار کے ایم پی اور سال 2014 میں نریندر مودی حکومت میں مرکزی وزیر بھی رہ چکے ہیں۔

یس پی کے اس اعتراض پر پلٹ وار کرتے ہوئے بی جے پی نے الزام لگایا ہے کہ سماج وادی پارٹی ہندو مخالف ہے اور اسلامک منھ بھرائی کی سیاست میں ملوث ہے۔ ایس پی حکومت بنی تو مندروں پر تالے لگا دئیے جائیں گے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;