جموں و کشمیر: نقلی بندوق کی نوک پر لوٹ کو انجام دینے والے گروہ کا پردہ فاش

ایس ایچ او سوپور اعظم اقبال نے بتایا کہ گرفتار شدہ لٹیروں نے نقلی بندوق کی نوک پر علاقے میں کئی ڈکیتیاں انجام دیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ لوگ قصبے میں گذشتہ ایک سال سے سرگرم تھے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

سوپور: جموں کشمیر پولس نے شمالی کشمیر کے قصبہ سوپور میں نقلی بندوق کی نوک پر لوگوں کو لوٹنے والے لٹیروں کے ایک گروپ کو طشت از بام کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

ایس ڈی پی او سوپور راجا ماجد نے جمعرات کو ایک پریس کانفرنس کے دوران تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ پولس کی خصوصی ٹیم نے لکڑی کے بنے ایک نقلی بندوق کی نوک پر لوگوں کو لوٹنے والے لٹیروں کے ایک گروپ کا پردہ فاش کیا جو سوپور کے مختلف حصوں میں لوگوں کو لوٹتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ چار افراد پر مشتمل ان لٹیروں کو جمعرات کے روز گرفتار کیا گیا۔

پولس نے گرفتار لٹیروں کی شناخت بلال احمد راتھر جو پیشہ کے لحاظ سے ترکھان ہے اور جس نے لکڑی کی بندوق بنائی تھی، لطیف عرف تسقی، فاروق احمد اور اشفاق احمد ساکنان سوپور کے بطور کیا ہے۔ ایس ڈی پی او نے کہا کہ لٹیروں کی تحویل سے ایک لکڑی کی بنی بندوق، ایک موٹر سائیکل، دو موبائیل فون ضبط کیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ لٹیرے غالباً ملی ٹنٹ بن کر لوگوں کو لوٹتے تھے، یہ لوگ منشیات کے عادی ہیں اور ہر بڑے کام میں شامل ہیں۔ اس موقعہ پر ایس ایچ او سوپور اعظم اقبال نے بتایا کہ گرفتار شدہ لٹیروں نے نقلی بندوق کی نوک پر علاقے میں کئی ڈکیتیاں انجام دیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ لوگ قصبے میں گذشتہ ایک سال سے سرگرم تھے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔