ضمنی انتخابات کی چاروں سیٹوں پر بی جے پی کے امیدواروں کا اعلان

بی جے پی کی مرکزی قیادت نے نوراتری کے آغاز پر پارٹی امیدواروں کی فہرست جاری کی۔ کھنڈوا پارلیمانی ضمنی انتخاب میں گیانیشور پاٹل کی شکل میں ایک نیا چہرہ سامنے آیا ہے۔

بی جے پی کا جھنڈا، تصویر آئی اے این ایس
بی جے پی کا جھنڈا، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

بھوپال: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے آج کھنڈوا پارلیمانی ضمنی انتخابات کے لئے گیانیشور پاٹل اور پرتھوی پور، رے گاؤں اور جوبت اسمبلی انتخابات کے ضمنی انتخابات کے لیے بالترتیب ڈاکٹر شیشوپال سنگھ یادو، پرتیما باگڑی اور سلوچنا راوت کے نام کا اعلان کیا ہے۔

بی جے پی کی مرکزی قیادت نے نوراتری کے آغاز پر پارٹی امیدواروں کی فہرست جاری کی۔ کھنڈوا پارلیمانی ضمنی انتخاب میں گیانیشور پاٹل کی شکل میں ایک نیا چہرہ سامنے آیا ہے۔ وہاں سے بی جے پی کے سینئر لیڈر نند کمار سنگھ چوہان کے بیٹے ہرش چوہان اور سابق وزیر ارچنا چٹنیس نے بھی دعویٰ پیش کیا تھا۔ لیکن دونوں پر اتفاق نہ ہونے کی وجہ سے پاٹل کے نام پر اتفاق رائے ہو گیا۔


اسی طرح ضلع نواری کے پرتھوی پور اسمبلی ضمنی انتخاب کے لیے ڈاکٹر شیشوپال سنگھ یادو نے داؤ کھیلا ہے۔ ضلع ستنا کی رائے گاؤں (ایس سی) سیٹ سے سابق وزیر جگل کشور باگڑی کے خاندان سے پرتیما باگڑی کو میدان میں اتارا گیا ہے، جبکہ حال ہی میں کانگریس چھوڑ کر علی راج پور ضلع کی جوبٹ (ایس ٹی) سیٹ سے بی جے پی میں شامل ہونے والی قبائلی رہنما سلوچنا راوت کو میدان میں اتارا گیا ہے۔

ان چار نشستوں کے لیے کانگریس پہلے ہی امیدواروں کا اعلان کر چکی ہے۔ کھنڈوا میں، اس نے سابق ایم ایل اے راجن نارائن سنگھ پرنی، پرتھوی پور میں نتیندر سنگھ راٹھور، رے گاؤں میں کلپنا ورما اور جوبٹ میں، ضلع کانگریس کے صدر مہیش پٹیل کو نامزد کیا ہے۔


ضمنی انتخابات کے لیے کاغذات نامزدگی جمع کرانے کا عمل یکم اکتوبر سے شروع ہوچکا ہے اور اس کی آخری تاریخ کل یعنی جمعہ ہے۔ اب تک اہم امیدواروں کی جانب سے ایک بھی کاغذات نامزدگی داخل نہیں کیے گئے ہیں۔ کانگریس اور بی جے پی کے امیدوار آج سے کاغذات نامزدگی داخل کر سکتے ہیں۔ ان کی جانچ پڑتال 11 اکتوبر کو ہوگی اور نام واپس لینے کی تاریخ 13 اکتوبر تک مقرر ہے۔ چاروں حلقوں میں پولنگ 30 اکتوبر کو ہوگی اور ووٹوں کی گنتی 2 نومبر کو ہوگی۔

کھنڈوا میں سینئر لیڈر نند کمار سنگھ چوہان (بی جے پی)، پرتھوی پور میں سابق وزیر برجندر سنگھ راٹھور (کانگریس)، رے گاؤں میں سابق وزیر جوگل کشور باگڑی (بی جے پی) اور جوباٹ میں کانگریس خاتون ایم ایل اے کلاوتی بھوریا کی موت کے سبب ضمنی انتخابات کرانے پڑ رہے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔