شمالی کوریا نے جاپان کے سمندر میں کیا میزائل تجربہ

جے سی ایس نے بتایا کہ اس کے بارے میں مزید معلومات حاصل کرنے کے لئے جنوبی کوریا اور امریکی خفیہ ایجنسی کے افسران اس کا تجزیہ کر رہے ہیں۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سیول: شمالی کوریا نے منگل کے روز جاپان کے سمندر (مشرقی سمندر) میں کم دوری تک مار کرنے والے بیلسٹک میزائل کا تجربہ کیا۔ جنوبی کوریا کے جوائنٹ چیف آف اسٹاف (جے سی ایس) نے یہ اطلاع دی۔ میزائل کو صبح 6 بج کر 40 منٹ پر مشرقی سمت میں جگنگ صوبے میں شمال کے موپیونگ-ری سے مشرق کی جانب داغی گئی۔ جے سی ایس نے بتایا کہ اس کے بارے میں مزید معلومات حاصل کرنے کے لئے جنوبی کوریا اور امریکی خفیہ ایجنسی کے افسران اس کا تجزیہ کر رہے ہیں۔

جاپانی حکومت نے کہا کہ ایک بیلسٹک میزائل نما پروجیکٹائل آج صبح اپنے خصوصی اقتصادی زون کے باہر سمندر میں گری۔ یہ لانچ شمالی کوریا کے لیڈر کم جونگ ان کی بہن کم یو جونگ کے اس بیان کے تین دن بعد کیا گیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ پیونگ یانگ جنوبی کوریا کی تجویز کے مطابق کوریائی جنگ کو باضابطہ طور پر خاتمے کا اعلان کر سکتا ہے اور یہاں تک کہ چوٹی کانفرنس کے امکانات پر بھی تبادلہ خیال کرسکتا ہے، بشرطیکہ جنوبی کوریا، شمالی کوریا کے خلاف اپنا دوہرا معیار اور دشمنانہ رویہ ترک کردے۔


دریں اثنا، سیول میں اعلی سیکورٹی حکام نے قومی سلامتی کونسل کا ہنگامی سیکورٹی اجلاس بلایا اور لانچ پر افسوس کا اظہار کیا۔ ان کے دفتر نے کہا کہ صدر مون جے ان نے شمالی کوریا کے میزائل لانچ اور حالیہ بیانات کے ’’جامع تجزیہ‘‘ کا حکم دیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔