جنوبی افریقہ پر کلین سویپ سے دو وکٹ دور ہندستان

ہندستان نے اپنے گیند بازوں کی شاندار کارکردگی کی بدولت جنوبی افریقہ کو فالو آن کیلئے مجبور کر دیا اور مسلسل دوسری اننگز کیلئے اتری مہمان ٹیم کے آٹھ وکٹ نکال کر فریڈم ٹرافی میں کلین سویپ یقینی کر لی

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

رانچی: ہندستان نے اپنے گیند بازوں کی شاندار کارکردگی کی بدولت پیر کو جنوبی افریقہ کو فالو آن کیلئے مجبور کر دیا اور مسلسل دوسری اننگز کیلئے اتری مہمان ٹیم کے تیسرے دن کے اختتام تک 132 رنز پر آٹھ وکٹ نکال کر فریڈم ٹرافي میں اپنی کلین سویپ یقینی کر لی۔

پنے کے بعد رانچی میں بھی فالو آن کی شرمندگی کا سامنا کرنے والی مہمان ٹیم نے دوسری اننگز میں بھی مایوس کن بیٹنگ دکھائی اور ٹیم نے صرف 36 رن پر اپنے پانچ وکٹ گنوا دیئے۔ مہمان ٹیم اب 46

اوور میں آٹھ وکٹ پر 132 رن بنا چکی ہے اور ہندستان کے اسکور سے 203 رنز پیچھے ہے۔ اس صرف دو وکٹ ہی بچے ہیں۔ تھيونس ڈی برون 30 رن اور اینرچ نورتجے پانچ رن بنا کر ناٹ آؤٹ ہیں۔ اسی کے ساتھ ہندوستان کی فریڈم ٹرافی میں 3-0 سے کلین سویپ اب صرف رسمی رہ گئی ہے۔

جنوبی افریقہ کو فالو آن کرانے میں ہندستانی گیند بازوں کا بھرپور تعاون رہا۔ فاسٹ بولر امیش یادو نے جہاں پہلی اننگز میں تین وکٹ لئے وہیں دوسری اننگز میں انہوں نے 35 رن پر دو وکٹ نکالے جبکہ محمد سمیع نے 10 اوور میں 22 رن پر دو وکٹ کی زبردست کارکردگی کے بعد دوسری اننگز میں جنوبی افریقہ کے نو اوور میں صرف 10 رن پر تین وکٹ اکھاڑ دیئے۔

لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے دونوں اننگز میں تین وکٹ نکالے وہیں ٹیسٹ ڈیبو کرنے والے اسپنر شہباز ندیم نے پہلی اننگز میں 22 رن پر دو وکٹ نکالے۔ دوسری اننگز میں آف اسپنر روی چندرن اشون نے کھاتہ کھول دیا اور میچ میں اپنی پہلی وکٹ نکالی۔ انہوں نے كیگسو ربادا (12) کو جڈیجا کے ہاتھوں کیچ کرا کر دن کا آخری وکٹ لیا۔

ہندستان نے تیسرے دن ڈرنکس کے بعد جنوبی افریقہ کی پہلی اننگز 56.2 اوور میں 162 رن کے معمولی اسکور پر سمیٹ دی جس سے اسے 335 رنز کی برتری مل گئی اور اس نے مسلسل دوسرے میچ میں مہمان ٹیم سے فالو آن کرایا۔ اگرچہ دوسری اننگز میں بھی جنوبی افریقہ کے بلے باز ہندستانی گیند بازوں کا سامنا نہیں کر سکے اور یادو نے كوئنٹن ڈی کاک (5) کو بولڈ کر وکٹ کا کھاتہ کھول دیا۔

دوسرے اوپننگ بلے باز ڈین ایلگر 16 رنز بنا کر ریٹائرڈ ہرٹ ہوگئے۔ جابر حمزہ کو سمیع نے اکاؤنٹ بھی نہیں کھولنے دیا جبکہ کپتان فاف ڈو پلیسس سمیع کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔ پلیسس پہلی اننگز میں 1 رن اور دوسری اننگز میں 4 رنز پر آؤٹ ہوئے۔ تمبا باووما کو بھی سمیع نے کوئی رن نہیں بنانے دیا اور ساہا کے ہاتھوں کیچ کرا ہندستان کو چوتھا وکٹ دلا دیا۔ آیا رام گیا رام کی پوزیشن میں کھیل رہی مہمان ٹیم کے ابتدائی چھ بلے باز دہائی میں بھی نہیں پہنچے۔

جارج لنزے (27 رن) اور ڈین پئٹ (23 رن) نے 31 رن کی پہلی بڑی شراکت کی۔ لنزے کو ندیم نے رن آؤٹ کیا۔ پئٹ نے پھر برون کے ساتھ 31 رن جوڑے۔ برون محتاط رن بناتے رہے اور 42 گیندوں میں چار چوکے اور ایک چھکے کی مدد سے 30 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ لوٹے جو دوسری اننگز کا سب سے بڑا اسکور بھی ہے۔ ان کے ساتھ نورتجے پانچ رن پر ناٹ آؤٹ ہیں۔ آف اسپنر اشون نے ربادا کو جڈیجہ کے ہاتھوں کیچ کرا کر دن کا آخری اور جنوبی افریقہ کا آٹھواں وکٹ نکالا۔ ربادا نے 16 گیندوں میں تین چوکے لگا کر 12 رن بنائے۔

جنوبی افریقہ نے کل اپنے 9 رن پر دو وکٹ گنوا دیئے تھے۔ اس کے بلے بازوں جابر حمزہ نے صفر اور کپتان پلیسس نے ایک رن سے اپنی اننگز کو آگے بڑھایا۔ پلیسس اگرچہ اپنے کل کے اسکور میں کوئی اضافہ نہیں کر سکے اور تیسرے دن پانچ گیندوں کے بعد ہی فاسٹ بولر امیش یادو نے انہیں بولڈ کر ہندستان کو دن کا پہلا اور مخالف ٹیم کا تیسرا وکٹ دلا دیا۔

حمزہ اگرچہ ایک اینڈ سنبھال كر کھیلتے رہے اور 16 رن پر تین وکٹ سے ٹیم کے اسکور کو 107 تک لے گئے۔ انہوں نے 79 گیندوں میں 10 چوکے اور ایک چھکا لگا کر 62 رنز کی نصف سنچری اننگز کھیلی۔ انہیں لیفٹ آرم اسپنر رویندر جڈیجہ نے بولڈ کر چوتھا وکٹ نکالا۔ ٹیم کے اسی اسکور پر پھر تمبا باووما بھی چلتے بنے جنہیں پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے کھلاڑی شہباز ندیم نے وکٹ کے پیچھے ردھمان ساہا کو کیچ کرایا۔

باووما نے 72 گیندوں میں پانچ چوکے لگا کر 32 رن بنائے۔ باووما اور حمزہ نے 91 رنز کی مفید نصف سنچری شراکت کی۔ هینرك كلاسین (6) کو جڈیجہ نے ہی بولڈ کیا اور لنچ تک جنوبی افریقہ کے 119 رنز پر چھ وکٹ نکال دیئے۔ دوپہر کے کھانے کے بعد افریقی ٹیم نے اپنے اگلے چار وکٹ 33 رن کے فرق پر گنوا دیئے۔جارج لنزے نے سرا سنبھالنے کی کوشش کی اور 81 گیندوں میں تین چوکے اور ایک چھکا لگا کر 37 رن بنائے۔ وہ دہائی کے ہندسے تک پہنچنے والے ٹیم کے تیسرے بلے باز رہے جن کی جدوجہد یادو نے ختم کی اور انہیں نویں بلے باز کے طور پر آؤٹ کیا۔ ڈین پئٹ (4) کو محمد سمیع نے ایل بی ڈبلیو کیا۔ کیگسو ربادا (صفر) کو یادو نے رن آؤٹ کیا جبکہ اینرچ نورتجے (4) کو ندیم نے ایل بی ڈبلیو کرکے حریف ٹیم کی اننگز سمیٹ دی۔

ڈرنکس کے بعد جنوبی افریقہ کی اننگز 56.2 اوور میں 162 رنز پر ڈھیر ہو گئی اور ہندستان نے اسسے فالو آن کرا لیا۔ یہ مسلسل دوسرا موقع ہے جب اس کو فالو آن کرنا پڑا ہے۔ اس سے پہلے پنے ٹیسٹ میں بھی مہمان ٹیم کو فالو آن کرنا پڑا تھا جس میچ میں اسے اننگز اور 137 رنز سے شکست کھانی پڑی۔ہندستان نے پہلا ٹیسٹ 203 رنز سے جیتا تھا اور تین ٹسٹ میچوں کی سیریز میں وہ 2-0 سے پہلے ہی مضبوط حالت میں ہے۔ اس کے لیے رانچی میں حریف ٹیم کو وهائٹ واش کرنا اب رسمی ہی رہ گئی ہے۔آخری بار دونوں ٹیموں کے درمیان فریڈم ٹرافی 2017-18 میں جنوبی افریقہ کی زمین پر ہوئی تھی جہاں میزبان ٹیم 2-1 سے جیتی تھی۔وہیں ہندستان یہ سیریز جیت سے ٹیسٹ چمپئن شپ میں بھی اپنی پوزیشن اور مضبوط کر لے گا۔