میں بھی یوراج کی طرح چھکے لگا سکتا ہوں: رشبھ پنت

وکٹ کیپر بلے باز رشبھ پنت نے ہندوستان کے سابق آل راؤنڈر یوراج سنگھ کی بلے بازی کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ وہ ہمیشہ چھکے لگانے کے شوقین تھے، وہ جب کرکٹ کھیلتے تھے تب ا ن کے شاٹ ہر طرف جاتے تھے

یوراج رشبھ
یوراج رشبھ
user

یو این آئی

نئی دہلی: آئی پی ایل 2021 میں دہلی کیپٹلس کی کمان سنبھالنے والے نوجوان وکٹ کیپر بلے باز رشبھ پنت نے ہندوستان کے سابق آل راؤنڈر یوراج سنگھ کی بلے بازی کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ وہ ہمیشہ چھکے لگانے کے شوقین تھے ۔ وہ جب کرکٹ کھیلتے تھے تب ان کے شاٹ ہر طرف جاتے تھے۔

پنت نے کہا ، "جب آپ چھکا لگاتے ہیں تو، عموماً اس میں کافی طاقت لگتی ہے لیکن جب یوراج بلے بازی کرتے تھے اور چھکے لگاتے تھے تو ایسا لگتا تھا کہ وہ بغیر کسی کوشش اور طاقت کے چھکے لگاتے ہیں، جس میں صرف ٹائمننگ ہوتی تھی۔ ان کے لگائے ہوئے چھکوں کو دیکھ کر مجھے بہت اچھا لگتا تھا اور محسوس ہوتا تھا کہ ایسا بھی کچھ ہوسکتا ہے اور یہی چیز میں اپنے اندر دیکھتا ہوں۔ مجھے لگتا ہے کہ میں بھی یوراج کی طرح چھکے لگاسکتا ہوں۔ ‘‘

سونیٹ کرکٹ اکیڈمی میں رشبھ پنت کے کوچ تارک سنہا نے کہا ، "یوراج کی طرح ، پنت نے بھی صحیح طریقہ سے گیندکو باونڈری پار کرانے کا راستہ تلاش کرلیا ہے جو بہت اچھی بات ہے۔ انہوں نے سونیٹ کرکٹ میدان پر ایک مرتبہ گیند کو میدان کے باہربھیج کچھ ہی کرکے دکھایا تھا۔ کئی موقعوں پر انہوں نے اپنا کھیل کا یہ پہلو دکھایا ہے لیکن آئی پی ایل 2018 میں رائل چیلنجرس بنگلور کے خلاف 48 گیندوں پر 84 رن کی وہ اننگز بے حد خاص تھی جس میں انہوں نے خود کو اس دورے کے یووراج سنگھ کے طور پر پیش کیا تھا۔

سنہا نے کہا ، "پنت ہمیشہ سے مضبوط بلے باز رہے ہیں اور اب ان کی طاقت میں اضافہ ہوگیا ہے اور وہ لمبے چھکے لگانے لگے ہیں۔ یہی ایک خوف ہے جو ہر بلے باز اور گیندباز کے اوپر بنانا چاہئے اور پنت نے یہ بنایا ہے۔ " واضح رہے کہ پنت کا محدود اوورز کا کرکٹ گراف بہت بہتر ہوا ہے ، لیکن ٹیسٹ میں اپنی عمدہ کارکردگی کی وجہ سے بی سی سی آئی کے ساتھ طویل سنٹرل کانٹرکٹ سے انہیں بہت فائدہ ملا ہے۔ پچھلے آئی پی ایل میں 52.61 کی اوسط اور 173.60 کی اسٹرائک ریٹ کے ساتھ 14 میچوں میں 684 رنز بنانے کے بعد ، پنت نے ایک بار پھر اعتماد بنایا ہے جو انہوں نے 19 سال کی عمر میں دہلی ٹیم میں داخلے کے وقت بنایا تھا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


    پسندیدہ ترین