سوشانت کی موت کے بعد اب تک 4 غمزدہ بچوں نے کی خودکشی

سوشانت سنگھ نے کم وقت میں اپنی صلاحیت کا لوہا منوا لیا تھا اور ان کے چاہنے والوں میں بڑوں کے ساتھ ساتھ بچے بھی شامل ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ سوشانت کی موت سے بچوں کو بھی اتنا ہی صدمہ پہنچا جتنا کے بڑوں کو۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

ایک طرف ممبئی پولس سوشانت سنگھ کی موت کا سبب جاننے کے لیے لگاتار ان کے قریبیوں اور بالی ووڈ ہستیوں سے پوچھ تاچھ کر رہی ہے، اور دوسری طرف سوشانت کی موت کے غم میں شیدائیوں کا برا حال ہو رہا ہے۔ سوشل میڈیا پر کئی چاہنے والوں نے اپنے درد کا اظہار کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ایک باصلاحیت اداکار کی کم عمری میں خودکشی پر ابھی تک یقین نہیں ہو پا رہا ہے۔ لیکن اس درمیان آپ کو یہ جان کر حیرانی ہوگی کہ سوشانت کے کچھ کمسن شیدائی ان کی موت کی خبر سے اتنے افسردہ ہوئے کہ اپنے آپ کو خودکشی سے نہیں روک پائے۔

ہندی نیوز پورٹل 'پتریکا' میں شائع ایک خبر کے مطابق سوشانت کی موت کی خبر سن کر اب تک 4 معصوم بچوں کی خودکشی کا معاملہ سامنے آیا ہے اور ان میں 3 لڑکیاں ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ 17 جون کو انڈمان اینڈ نکوبار میں 15 سالہ ایک لڑکی نے خودکشی کی جو بنیادی طور پر بہار کی باشندہ تھی۔ بتایا جا رہا ہے کہ لڑکی سوشانت سنگھ کی موت کی خبر سننے کے بعد ہی ڈپریشن میں چلی گئی تھی اور پھر پھانسی لگا کر خودکشی جیسا قدم اٹھایا۔ اس واقعہ کے بعد انڈمان اینڈ نکوبار کے ڈی جی پی نے کہا کہ "میری سبھی نوجوانوں سے اپیل ہے کہ وہ اس طرح کا خطرناک قدم نہ اٹھائیں کیونکہ ملک کو آپ کی ضرورت ہے۔"

اس سے قبل پٹنہ کی ایک لڑکی نے بھی سوشانت کی موت کی خبر سننے کے بعد خودکشی کر لی تھی۔ اس واقعہ کے تعلق سے بتایا جا رہا ہے کہ لڑکی صدمہ میں چلی گئی تھی اور اسے یقین نہیں ہو رہا تھا کہ سوشانت سنگھ اب اس دنیا میں نہیں ہیں۔ اتر پردیش کے بریلی کی رہنے والی 10ویں درجہ کی طالبہ کے بارے میں بھی بتایا جا رہا ہے کہ اسے جیسے ہی پتہ چلا کہ سوشانت سنگھ نے پھانسی لگا کر خودکشی کر لی ہے، وہ پریشان ہو گئی۔ اس غم نے طالبہ کو اتنا پریشان کیا کہ اس نے بھی خودکشی جیسا قدم اٹھا لیا۔

چوتھا واقعہ بہار کے نالندہ کا ہے جہاں 9ویں درجہ کے طالب علم نے سوشانت سنگھ کی موت کی خبر سننے کے بعد ڈپریشن میں آ کر خود کو پھانسی لگا لی۔ مہلوک کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ اس نے سوشانت سنگھ راجپوت کی فلم 'ایم ایس دھونی- دی انٹولڈ اسٹوری' رات میں دیکھی تھی اور منگل کی صبح وہ اپنے زیر تعمیر مکان کے کمرے میں گیا جہاں کمرے کا دروازہ بند کر رسّی کے سہارے پھندے سے جھول گیا۔ گھر والوں کے مطابق کافی دیر تک جب وہ گھر نہیں لوٹا تو لوگوں کو فکر ہوئی اور وہاں گئے۔ دروازہ کھٹکھٹانے پر جب نہیں کھلا تو کسی انہونی کے اندیشہ سے دروازہ توڑا گیا۔ اندر اس کی لاش پھندے سے جھولتی ہوئی نظر آئی۔